No icon

عمران خان مرکزی حکومت سے ہاتھ دھو بیٹھے گے

جہانگیر ترین نے کہا ہے کہ اگر مجھے تنگ کیا گیا تو عمران خان مرکزی حکومت سے ہاتھ دھو بیٹھے گے

  اپریل2020ء سینئر صحافی عمران یعقوب کا کہنا ہے کہ سازشیوں نے وزیراعظم عمران خان کو کہا ہے کہ جہانگیر ترین نے کہا ہے اگر چینی سکینڈل میں مجھے پکڑا گیا تو مرکز عمران خان کے ہاتھ سے چلا جائے گا۔تفصیلات کے مطابق معروف صحافی عمران یعقوب کا چینی سکینڈل پر کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اگر کرپشن میں ملوث نہیں تو وہ نااہلی میں ملوث ہیں، انھوں نے کہا اس وقت سینئر رہنما پی ٹی آئی جہانگیر ترین کے خلاف سازشیں کی جارہی ہے، ان سے متعلق کہا جا رہا ہے کہ انہوں نے ایک محفل میں کہا ہے کہ اگر وزیراعظم عمران خان وفاقی وزیر خسرو بختیار کو اس سکینڈل میں پکڑیں گے تو جنوبی پنجاب ان کے سے چلا جائے گا۔۔اگر چودھری پرویزالٰہی اور مونس الٰہی کو پکڑا تو پنجاب ہاتھ سے جائے گا۔
 

اور اگر مجھے تنگ کیا گیا تو مرکزی حکومت ہیں ان کے ہاتھ سے جائے گی۔سازشیوں نے یہ بات جب عمران خان تک پہنچائی توانہوں نہ نے کہا کہ اگر ایسی بات ہے تو میں ان سب کو دیکھ لوں گا کسی کو نہیں چھوڑوں گا۔سینئر صحافی کا کہنا تھا کہ جہانگیر ترین کے خلاف ایسی سازش کی گئی ہے مگر وہ ایک سینئر اور زیرک سیاستدان ہیں،وہ ایسی بات نہیں کر سکتے۔

اس سے قبل بھی اس طرح کی باتیں سوشل میڈیا پر گردش کر چکی ہیں،ہ کچھ روز سے میڈیا پر ایک خبر زیر گردش ہے جس کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے اسمبلیاں تحلیل کرنے کیلئے صدر مملکت عارف علوی کو سمری بھیج دی ہے۔ اس حوالے سے جمعرات کے روز نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے صدر مملکت نے وضاحت کی، اور میڈیا پر چلنے والی خبریں بے بنیاد قرار دے دیں۔
صدر مملکت کا کہنا ہے کہ آرڈینینس اور دیگر معاملات کیلئے وزیراعظم ہاوس سے سمریاں موصول ہوتی رہتی ہیں، تاہم اسمبلیاں تحلیل کرنے کی کوئی بھی سمری انہیں موصول نہیں ہوئی۔ اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان اور ان کے درمیان کوئی بات بھی نہیں ہوئی۔ فیصلہ سازی کے حوالے سے وزیراعظم اور ان کے درمیان مشاورت جاری رہتی ہے۔ جو لوگ حکومت گرانے کی باتیں کرتے ہیں، وہ یاد رکھیں گے حکومت اپاہج نہیں ہے، ہم کچھ بھی کر سکتے ہیں۔

 

Comment